داعش شام کا سربراہ امریکی ڈرون حملے میں ہلاک

امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون کا کہنا ہے کہ داعش شام کا سربراہ منگل کے روز کیے جانے والے ایک ڈرون حملے میں ہلاک ہوگیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے ’عرب نیوز‘ کے مطابق پینٹاگون سنٹرنل کمانڈ کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل ڈیو ایسٹ برن نے خبر ایجنسی اے ایف پی کو بتایا کہ داعش شام کا سربراہ ماہر الاغال منگل کے روز کیے جانے والے ایک امریکی ڈرون حملے میں اس وقت ہلاک ہوگیا جب وہ موٹرسائیکل پر سوار تھا۔ حملے میں اس کا انتہائی قریبی ساتھی شدید زخمی ہوا ہے۔ سیرین آبزرویٹری نے بھی الاغال کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔

امریکی حکام کے مطابق الاغال داعش کے سرفہرت پانچ میں شامل تھا اور شام میں داعش کا سربراہ تھا۔ اس نے شام اور عراق سے باہر داعش کا نیٹ ورک پھیلانے میں انتہائی جارحانہ کردار ادا کیا۔

یہ بھی پڑھیے

ایک ہی گھر میں بیاہی جانے والی تین بہنوں نے ایک ساتھ بچوں سمیت خودکشی کرلی

واضح رہے کہ یہ حملہ اس کارروائی کے پانچ ماہ بعد کیا گیا ہے جس میں داعش کا سرغنہ ابو ابراہیم القریشی ہلاک ہوا تھا۔ امریکی حکام کے مطابق شام میں رات گئے امریکی فورسز نے کارروائی کی جس کے دوران گرفتاری سے بچنے کیلئے داعش کے سربراہ نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا تھا۔