برطانیہ میں جنسی جرائم کے 870 مجرموں کو ’ سوری ‘ کہنے پر معاف کردیا گیا

برطانیہ میں جنسی جرائم میں ملوث 870 مجرموں کو ’ سوری ‘ کہنے پر معاف کردیا گیا۔

برطانیہ میں گزشتہ دو سال کے دوران جنسی جرائم کے 870 مجرموں صرف ’ سوری ‘ کہنے پر معاف کردیا گیا اور ان کا نام بھی جنسی جرائم کے مرتکب افراد کی فہرست میں شامل نہیں کیا گیا۔

ان میں کئی سنگین نوعیت کے جرائم میں ملوث مجرم بھی شامل ہیں۔ مثال کے طور پر ان میں 5 مجرم ایسے بھی تھے جنہوں نے بچوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ یہ کیسز ’ کمیونٹی ریزولوشن ‘ کے ذریعے نمٹائے گئے تھے جہاں ان مجرموں نے اپنے جرم پر صرف ’ سوری ‘ کہہ دیا اور انہیں بغیر سزا کے چھوڑ دیا گیا۔

یہ بھی پڑھیے

اطالوی شہر لازیو میں شادی کریں اور لاکھوں روپے حاصل کریں

کمیونٹی ریزولوشن کے ذریعے دکان سے چوری جیسے اتنہائی چھوٹے کیسز نمٹائے جاتے ہیں۔ لیکن اتنی بڑی تعداد میں جنسی جرائم، بالخصوص بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے جرائم کو نمٹائے جانے کے انکشاف پر ملک میں کھلبلی مچ گئی ہے۔ ملک میں پولیس کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے جس کی جانب سے ’ کمیونٹی ریزولوشن ‘ کی اسکیم متعارف کرائی گئی ہے۔