یوٹیوب کا ویکسین مخالف مواد کو بلاک کرنے کا اعلان

ویڈیو شیئرنگ کی سب سے بڑی ویب سائٹ یوٹیوب نے ہر طرح کے ویکسین مخالف مواد کو بلاک کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق یوٹیوب نے ہر طرح کے ویکسین مخالف مواد کو بلاک کرنے کا اعلان ایک بلاگ پوسٹ کے ذریعے کیا ہے۔ کمپنی کے مطابق کورونا وائرس سمیت عالمی ادارہ صحت یا ممالک میں منظوری حاصل کرنے والی ہر قسم کی ویکسینز کے اثرات کے خلاف گمراہ کن مواد پر پابندی عائد کی جائے گی۔

یوٹیوب کے مطابق کسی بھی ویکسین کے حوالے سے صارفین کو گمراہ کن دعویٰ کرنے سے اجتناب کرنا چاہیے۔ تاہم ویکسین پالیسیز، نئے ویکسین ٹرائلز اور ماضی میں ویکسینز کی کامیابی یا ناکامی کے حوالے سے مواد کو پوسٹ کرنے کی اجازت ہوگی۔

یہ بھی پڑھیے

ایپل نے آئی فون 13 متعارف کرادیا

کمپنی کا کہنا ہے کہ صارفین ویکسینز پر اپنے ذاتی تجربے اور سائنسی بحث بیان کرسکیں گے مگر ویکسین سے متعلق گمراہ کن معلومات کی اجازت نہیں ہوگی۔ ویکسینز کی مخالفت کرنے والے بڑے ناموں سے منسلک چینیلز کو پلیٹ فارم سے ہٹایا جائے گا۔

دوسری جانب فیس بک اور ٹوئٹر نے بھی کورونا وائرس اور ویکسینز کے حوالے سے گمراہ کن مواد پر پابندی عائد کی ہے۔

واضح رہے کہ رواں برس اگست میں یوٹیوب نے بتایا تھا کہ اس نے اپنے پلیٹ فارم پر کورونا وائرس سے متعلق بہت زیادہ خطرناک گمراہ کن مواد پر مبنی 10 لاکھ ویڈیوز کو ڈیلیٹ کردیا ہے۔ یوٹیوب کے چیف پراڈکٹ آفیسر نیل موہن نے ایک بلاگ پر شیئر کرتے ہوئے یہ اعداد و شمار بتائے کہ فروری 2020 سے اب تک 10 لاکھ ویڈیوز کو ڈیلیٹ کیا گیا ہے۔