مشفیق الرحیم کے بیان نے بنگلادیش کرکٹ میں نیا تنازعہ کھڑا کردیا

بنگلادیش کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مشفیق الرحیم کے بیان نے نیا تنازعہ کھڑا کردیا ہے۔

بنگلادیش کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مشفیق الرحیم نے کہا ہے کہ پاکستان کے خلاف سیریز کیلئے انہیں آرام نہیں دیا گیا بلکہ ٹیم سے ڈراپ کیا گیا ہے جس کی وجہ سے نیا تنازعہ کھڑا ہوگیا ہے۔

کرکٹ کی معروف ویب سائٹ ’کرک انفو‘ کے مطابق مشفیق الرحیم نے کہا ہے کہ انہوں نے مینجمنٹ سے کہا تھا کہ وہ پاکستان کے دورے کے دوران ٹیم کیلئے کھیلنے کو تیار ہیں لیکن انہیں بتایا گیا کہ ٹیم مینجمنٹ اور کوچ نے انہیں ٹیم سے ڈراپ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وہ ابھی اس سٹیج پر نہیں ہیں کہ میں آرام کریں۔ ان کا ورلڈکپ اچھا نہیں گیا لیکن وہ اس سیریز کے دوران بہتر پرفارم کرنا چاہتے تھے۔

یہ بھی پڑھیے

آئی سی سی نے انڈر 19 کرکٹ ورلڈکپ 2022 کے شیڈول کا اعلان کردیا

واضح رہے کہ بنگلا دیش کے سابق کپتان اور مڈل آرڈر بیٹسمین مشفیق الرحیم دورہ پاکستان کے دوران ٹیم کا حصہ نہیں ہیں۔ ابتدائی طور پر بتایا گیا تھا کہ انہیں آرام کی غرض سے ٹیم میں شامل نہیں کیا گیا۔