224 طلبہ میں حکیم محمد سعید اسکالر شپ کی تقسیم چیک و اسناد

ہمدرد فاؤنڈیشن پاکستان کی صدر محترمہ سعدیہ راشد نے طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ وقت کی قدر اور اس کا صحیح استعمال کریں۔ حکیم صاحب بھی اس پر سختی سے عمل کیا کرتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنے بزرگوں کی عزت و تعظیم کرنی چاہیے، اس سے اللہ پاک بلند مقام عطا کرتے ہیں

یہ بات انہوں نے ہمدرد فاؤنڈیشن پاکستان کے زیر اہتمام نعمت بیگم ہمدرد یونیورسٹی ہاسپٹل میں حکیم محمد سعید اسکالر شپ کی تقسیم چیک و اسناد کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں وقت پر سونا چاہیے اور صبح سویرے اٹھنے کی عادت اپنانی چاہیے۔ اس سے نہ صرف آپ کو اپنے کام کرنے کا زیادہ وقت ملے گا بلکہ صحت بھی اچھی رہے گی اور اس سے دین اور دنیا بھی بنے گی۔ ہمارے زمانے میں میں وقت کی پابندی کا بڑا خیال رکھا جاتا تھا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اسمارٹ فون نے نئی نسل کو اپنا گرویدہ بنا رکھا ہے۔ اس سے نہ صرف وقت اور پیسے کا ضیاع بلکہ صحت کو بھی نقصان پہنچا رہے ہیں۔

تقریب کے مہمان خصوصی ہمدرد یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر شبیب الحسن نے کہا کہ شہید حکیم محمد سعید نے ایک بیچ بویا تھا جو آج ایک تناور درخت کی شکل اختیار کر گیا ہے۔ ہمدرد تعلیم و صحت کے میدان میں کافی محنت کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکیم صاحب صاحب کا قول تھا پاکستان سے محبت کرو پاکستان کی تعمیر کرو اسی جذبے کے تحت ہمدرد لوگوں کی خدمت کر رہا ہے جس کا منہ بولتا ثبوت آج کی یہ تقریب ہے۔ مجھے انتہائی خوشی ہے کہ میں طلبہ کی اسکالر شپ کی تقریب میں موجود ہوں۔

یہ بھی پڑھیے

صدر ہمدرد فاؤنڈیشن کی جانب سے اولمپئن ارشد ندیم کو پانچ لاکھ روپے کا چیک

تقریب میں نعمت بیگم، ہمدرد یونیورسٹی ہاسپٹل کے میڈیکل ڈائریکٹر تعمیم اختر، پروفیسر ڈاکٹر جعفری، پروگرام اینڈ پبلیکیشنز ڈپارٹمنٹ کی ایچ او ڈی ڈاکٹر ثناء غوری اور طلبہ و طالبات کے ساتھ ان کے والدین کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ شہید حکیم محمد سعید میموریل اسکالر شپ 2021-2022 کے چیک و اسناد کی تقسیم کیلئے ملک کے 26 سرکاری تعلیمی بورڈز کے امتیازی نمبروں سے پاس کردہ 224 طلبہ کا انتخاب کیا گیا جس کے تحت میٹرک کے 147 طلبہ کو پچیس ہزار روپے فی کس اور انٹر کے77 طلبہ کو 50 ہزار روپے فی کس اسکالرشپ دی گئیں۔ ان میں کراچی بورڈز میٹرک کے 130 طلبہ اور انٹربورڈز کراچی کے 49 طلبہ شامل ہیں۔