عمران خان نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف احتجاج کی کال دے دی

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف احتجاج کی کال دے دی۔

اپنے ایک بیان میں عمران خان نے کہا کہ امپورٹڈ حکومت نے تیل کی قیمتوں میں فی لیٹر 40 فیصد یا 60 روپے کا اضافہ کردیا ہے۔ اس سے عوام پر 900 ارب روپے کا اضافی بوجھ آئے گا اور بنیادی اشیاء کی قیمتیں بڑھیں گی۔ اس کے ساتھ بجلی کی قیمت میں 8 روپے کے اضافے سے پورے ملک کو دھچکا لگے گا۔ مہنگائی کی ممکنہ شرح 30 فیصد ہوگی جو 75 برس میں بلند ترین ہے۔

عمران خان نے کہا کہ ہماری حکومت نے کورونا وبا کا دباؤ برداشت کیا اور 1200 ارب کا معاشی پیکج دیا۔ اپنے لوگوں کو بچانے کیلئے ہم نے رواں سال سیلز ٹیکس صفر کرتے ہوئے 466 ارب روپے توانائی پر سبسڈی کیلئے مہیا کیے۔ ہمارے لیے تو پہلی ترجیحِ ہمیشہ ہمارے عوام ہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

اسٹیبلشمنٹ نے صحیح فیصلے نہ کیے تو فوج تباہ ہوجائے گی ، عمران خان

عمران خان نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف احتجاج کی کال دی۔ انہوں نے عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ میں چاہتا ہوں کہ سب نمازِ جمعہ کے بعد نکلیں اور اس امپورٹڈ سرکار کی جانب سے عوام کو کچلنے اور ملک میں معاشی تباہی پھیلانے کیلئے کی جانے والی عوام دشمن مہنگائی کیخلاف پرامن احتجاج کریں کیونکہ ان کا اس ملک سے کچھ بھی مفاد وابستہ نہیں اور تمام اثاثے ملک سے باہر ہیں۔