کلثوم نواز اور شہباز شریف کے اضافی ویلتھ ٹیکس سے متعلق ایف بی آر اپیلیں خارج

شریف خاندان کو سپریم کورٹ سے بڑا ریلیف مل گیا۔ سپریم کورٹ نے کلثوم نواز اور شہباز شریف کے اضافی ویلتھ ٹیکس سے متعلق ایف بی آر کی اپیلیں خارج کردیں۔

سپریم کورٹ نے شریف فیملی کو بڑا ریلیف دیتے ہوئے کلثوم نواز اور شہباز شریف کے اضافی ویلتھ ٹیکس سے متعلق ایف بی آر کی اپیلیں خارج کردی۔

سپریم کورٹ نے کہا کہ کلثوم نواز اور شہباز شریف نے 1994 سے 1998 تک ویلتھ ٹیکس جمع کرایا تھا۔ اضافی ویلتھ ٹیکس کیلئے ایف بی آر نے نوٹس جاری کیے تھے۔ اضافی ویلتھ ٹیکس کیلئے ڈیمانڈ نوٹس کا دیا جانا ضروری ہے لیکن ایف بی آر کلثوم نواز اور شہباز شریف کو ڈیمانڈ نوٹس بھجوانا ثابت نہ کر سکا۔

یہ بھی پڑھیے

پیپلز پارٹی نے لاہور میں نیا جنم لے لیا، آصف زرداری

ویلتھ ٹیکس جمع کرانے کے بعد ہی اضافی واجبات کے نوٹس بھیجے گئے تھے۔ لاہور ہائیکورٹ میں شریف خاندان نے ایف بی آر نوٹس چیلنج کر دیئے تھے۔

ایف بی آر کے اضافی ٹیکس نوٹس لاہور ہائیکورٹ نے کالعدم قرار دے دیئے تھے۔ ایف بی آر نے لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کر رکھا تھا۔