فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ بند ہونے میں خلائی مخلوق کا ہاتھ

گزشتہ دنوں فیس بک انسٹاگرام اور واٹس ایپ دنیا بھر میں 7 گھنٹوں کیلئے بند رہے تھے جس کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ اس میں خلائی مخلوق ملوث ہے۔

فیس بک انتظامیہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا تھا کہ فیس بک اور اس کی ذیلی سوشل میڈیا پلیٹ فارمز خرابی کے باعث آف لائن ہوئیں تاہم اس کے باوجود اس حوالے سے کئی طرح کے سازشی نظریات گردش میں ہیں۔

کئی لوگوں نے دعویٰ کیا کہ یہ ہیکرز کی کارروائی تھی جنہوں نے اربوں فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ صارفین کا نجی ڈیٹا چوری کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

سروس ڈاؤن، بانی فیس بک مارک زکر برگ کو ساڑھے 6 ارب ڈالرز کا نقصان

تاہم اب اس حوالے سے ایک اور حیران کن دعویٰ بھی سامنے آگیا ہے۔ غیر ملکی اخبار دی سن کے مطابق 74 سالہ ماہر عملیات یوری گیلر نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ کے بند ہونے کی واردات میں خلائی مخلوق ملوث ہے۔

یوری نے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر ایک ٹوئٹ کے ذریعے کہا ہے کہ نیشنل سکیورٹی ایجنسی اور پینٹاگون اس واقعے کی تحقیقات میں مصروف ہیں۔ خلائی مخلوق کی ٹیکنالوجی یہ سب کر سکتی ہے۔ انسانوں کے ایٹمی بیلسٹک میزائل سسٹمز خطرے میں ہیں۔ اس میں روس اور چین بھی ملوث ہیں۔

انہوں نے مزید لکھا کہ خلائی مخلوق زمین پر ایٹمی ہتھیاروں کو بھی نشانہ بنارہے ہیں۔