اسکول ٹیچر کو مردہ قرار دے کر اسی کے ہاتھ میں ڈیتھ سرٹیفکیٹ تھمادیا گیا

بھارت میں ایک زندہ اسکول ٹیچر کو مردہ قرار دے کر اسی کے ہاتھ میں ڈیتھ سرٹیفکیٹ تھما دیا گیا۔

بھارتی ٹی وی چینل نیوز 18 کے مطابق ریاست مہاراشٹرا کے شہر تھانے میں چندر شیکھر نامی 55 سالہ اسکول ٹیچر کو میونسپل کارپوریشن نے کال کی اور کہا کہ وہ اپنا ڈیتھ سرٹیفکیٹ لے جائیں۔ جب چندر شیکھر جوشی کال پر بات کرنے کے بعد میونسپل کارپوریشن پہنچے تو انہیں بتایا گیا کہ انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ کے مطابق 22 اپریل 2021 کو آپ کا انتقال ہوگیا تھا اور اس کے بعد سے ہی آپ کو سرکاری دستاویزات میں مردہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

بینک لوٹنے کیلئے جانے والی خاتون چھٹیوں کے باعث تین روز تک اندر ہی پھنسی رہی

چندر شیکھر جوشی کے ڈیتھ سرٹیفکیٹ میں کورونا وائرس کو ان کی موت کی وجہ قرار دیا گیا ہے۔ ڈیتھ سرٹیفکیٹ میں کہا گیا ہے کہ چندر شیکھر جوشی کورونا کا شکار ہو کر 10 ماہ قبل انتقال کر گئے تھے۔

ڈیتھ سرٹیفکیٹ موصول کرنے کے بعد چندر شیکھر جوشی نے میڈیا کو بتایا کہ اکتوبر 2020 میں انہیں کورونا ضرور ہوا تھا تاہم وہ چند ہی روز میں صحتیاب ہوگئے تھے۔