ٹک ٹاک کچن کھانے ڈیلیور کرے گا، صارفین کو منافع میں حصہ ملے گا

مختصر ویڈیو شیئرنگ ایپ ٹک ٹاک کچن نامی سروس سے اب صارفین کو اپنی سائٹ پر مشہور ہونے والے کھانے بھی ڈیلیور کرے گی۔

خلیج کے مؤقر انگریزی اخبار عرب نیوز کے مطابق مختصر ویڈیو شیئرنگ ایپ ٹک ٹاک کچن نامی سروس سے اب صرف کھانوں کی عالمی شہرت یافتہ ایپ ورچوئل ڈائننگ کانسیپٹس اور گرب ہب کے ساتھ اشتراک کر رہی ہے جس کے بعد اپنی سائٹ پر مشہور ہونے والے کھانے بھی ڈیلیور کرے گا۔

اس ضمن میں خلیجی اخبار مؤقر اخبار نے بلوم برگ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ٹک ٹاک کچن کا مینیو ایپ کی مقبول ڈشز پر مبنی ہوگا۔ مینیو میں فیٹا پاستا بھی شامل ہے جس کو گوگل نے 2021 کی سب سے زیادہ سرچ کی جانے والی ڈش قرار دیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے

ٹک ٹاکر حریم شاہ کی پہلی تنخواہ کتنی تھی؟

اخبار کے مطابق ابتدائی طور پر مینیو میں پاستا، چپس، سمیش برگرز اور کارن ربز شامل ہوں گے جبکہ مینیو میں ہر تین ماہ بعد تبدیلی کی جائے گی۔

ٹک ٹاک نے کہا ہے کہ منافع میں سے کچھ رقم ان افراد کو بھی دی جائے گی جن کے کھانوں کی ویڈیوز ٹک ٹاک پر مقبول ہوئی ہوں۔ لیکن ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ منافع کس شرح سے دیا جائے گا۔

میڈیا کے مطابق ابتدائی طور پر ٹک ٹاک کچن کو 300 مقامات پر لانچ کیا جائے گا جو مارچ میں ڈشز کی ڈیلیوری کا آغاز کرے گا۔ جبکہ آئندہ سال کے اختتام تک ٹک ٹاک کچن کے ایک ہزار سے زائد ریسٹورنٹس کھولنے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے۔